Jaag Kashmir online news from Dadyal, Dudyal, Mirpur and Azad Kashmir
Jaag Kashmir online news from Dadyal, Dudyal, Mirpur and Azad Kashmir Mon, 16 Jan 2017

فون پر صرف uc browser میں کھولیں

Use UC Browser to open on mobile.

News from Dadyal, Mirpur and all Azad Kashmirسعودی عرب کا بزنس مین اللہ کو پیارا ہو گیا :خطر ناک وائرس کا حملہ درجنوں بچے زندگی کی بازی ہار گئے

وقاص چوہدری نے یہ خبر 2017-01-11 کو pm05:25 پرچناری کی کیٹیگری میں پوسٹ کی اور ابھی تک اس کو 49 قارئین نے پڑھا ہے۔
 

Jaagkashmir.com urdu news dadyal mirpur azad kashmir

چناری ( اعجاز احمد میر،خصوصی رپورٹر)

ضلع ہٹیاں بالا جہلم ویلی میں خطرناک وائرس کا حملہ دو ماہ کے دوران ایک درجن سے زائد بچے اور جوان زندگی کی بازی ہار گئے جبکہ درجنوں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا محکمہ صحت آزاد کشمیر خطرناک وائرس کاعلاج ڈھونڈنے میں ناکام عوام میں شدید تشویش کی لہر ڈور گئی عوامی حلقوں نے وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان سے اپنے آبائی ضلع میںخطرناک صورتحال کے نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا ۔تفصیلات کے مطابق ضلع ہٹیاں بالا،چناری اور گردونواح میں نامعلوم خطرناک وائرس نے گذشتہ دو ماہ سے انسانی جانوں کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اس وائرس کا شکار ہو نے والے تقریباایک درجن سے زائد معصوم بچے اور جوان زندگی کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ درجنوں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہے اس وائرس کی علامات یہ ہیں کہ سب سے پہلے انسان کو پیچس اور الٹی آتی ہے اسکے بعد یہ چھاتی پر اثر انداز ہو کر مریض کو نمونیا کا شکار کر دیتا ہے اور اسکے بعدیہ وائرس انسانی دماغ کی رگیں پھاڑ دیتا ہے جس کے بعد مریض کا بچنا مشکل ہو جاتا ہے چند ہفتے قبل چناری کے رہائشی راجہ عدیل کی بیٹی اس بیماری کا شکار ہو کر خالق حقیقی سے جا ملی اسکے بعد سعودی عرب سے آئے ہوئے بزنس مین سید سجاد ہمدانی آف امر اساون چناری بھی الشفاء اسلام آباد میں زیر علاج رہنے کے بعد اللہ کو پیارے ہو گئے گذشتہ روز چناری کے مقامی نوجوان تاجر ساجد ملک عرف کاکا کے چند ہفتوں کے فرزند بھی ایمز مظفرآباد میں زیر علاج رہنے کے بعد جانبر نہ ہو سکا اور خالق حقیقی سے جا ملاساجد ملک کے بیٹے کی نماز جنازہ بدھ کے روز بھرائیاں چناری میں ادا کی گئی جس میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور اسے آہوں اور سسکیوں میں سپرد خاک کر دیا گیا ان کے علاوہ اس خطرناک وائرس سے مرنے والے افراد کی تعداد ایک درجن سے زائد بتائی جارہی ہے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ پیچس اور الٹی آنے کی صورت میں لوگ سست روی سے کام نہ لیں فورا ڈاکٹر سے رابطہ کریں سست روی انسانی جان کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتی ہے یاد رہے کہ اس خطرناک وائرس سے قبل وزیراعظم آزاد کشمیر کے آبائی ضلع میں کالے یرقان کی وباء کے باعث دو درجن سے زائد افراد جاں بحق ہو گئے تھے اب اس نئے نامعلوم وائرس نے انسانی جانوں کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اگر ذمہ داران نے اس جانب توجہ نہ دی تو وزیراعظم آزاد کشمیر کے آبائی ضلع میں بڑے پیمانے پر ہلاکتیںہو سکتی ہیںآئے روز خطرناک وائرس سے ہو نے والی اموات کے بعد عوام میں شدید تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ آزاد کشمیر کا محکمہ صحت سفید ہاتھی بن چکا ہے اگر وزیراعظم کے آبائی ضلع میں محکمہ صحت کی یہ سست روی ہے تو باقی آزاد کشمیر کے عوام کا کیا حال ہو گا وزیراعظم فورا اس مسئلہ کا نوٹس لیتے ہوئے انسانی جانوں کو بچانے کے لیے اقدامات کریں

 

اگلی خبر پڑہیں پچھلی خبر پڑہیں
Click on image to Enlarge
Jaag Kashmir urdu news mirpur azad kashmir

ایک ماہ کی مقبول ترین