Jaag Kashmir News


Jaagkashmir.com urdu news dadyal mirpur azad kashmir

چکسواری (عابد حسین چودھری /جاگ کشمیر نیوز) 

چکسواری اور اس کے گرد و نواح میں بے روز گاری کا سونامی بے قابو،نوجوان معقول اور با عزت روز گا ر نہ ہونے کی وجہ سے ڈپریشن کا شکار۔بیرون ملک فرار کروانے والے ایجنٹوں سے دھوکے کھانے کے بعد نوجوان بد دل ہیں۔سابقہ اور موجودہ حکومت بھی چکسواری اور اس کے گرد ونواح میں موجود پڑھے لکھے نوجوانوں کو نوکریاں دینے میں ناکام رہی۔نوجوانوں کو با عزت روز گار اور زندگی گزارنے کیلئے ہنر سکھائے جائیں تا کہ وہ پرائیویٹ سیکٹر میں اپنا کاروبار کر سکیں۔ حکومت ٹیکنیکل تعلیم کیلئے ادارے قائم کرے۔ چکسواری میں ٹیکنیکل ادارے کی شدت سے ضرورت ہے۔تفصیلات کے چکسواری اور اس کے گر د و نواح میں بے روز گاری نے کئی نوجوانوں کو ڈپریشن کا مریض بنا دیا۔چکسواری کے بیشتر نوجوان شادی کے بعد بر طانیہ کا ویزہ حاصل کر لیتے تھے۔تعلیمی اور تہذیبوں کے فرق کی وجہ سے شادیوں کی ناکامی اور روز گار کے کم مواقع ہونے کی وجہ سے برطانیہ میں بھی نوجوانوں کیلئے کوئی کشش نہیں رہی۔بیرون ملک جانے کے خواہش مند نوجوان بھی مایوس ہونے لگے۔ چند سالوں سے برطانیہ جانے والے نوجوان بھی خستہ حالی کا شکار ہیں۔سابقہ حکومت نے نوجوانوں کو با عزت روز گار دینے کیلئے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے۔ چند نوجوانوں کو ایڈہاک ملازمتیں دی گئیں۔جنھیں مسلم لیگ ن کی حکومت بر طرف کر رہی ہے۔پاکستان مسلم لیگ ن کی موجودہ حکومت کو چاہیے کہ نوجوانوں کو با عزت روز گار دینے اور حکومت سے بوجھ ہٹانے کیلئے ٹیکنیکل سکولز قائم کرے تا کہ نوجوان ہنر سیکھ کر اپنا روز گار حاصل کر سکیں اور اس سے پرائیویٹ سیکتر میں نوجوانوں کو روز گار مل سکے۔ حکومت پہلے ہی پچاس ارب روپے سے زیادہ بجٹ صرف تنخواہوں پر خرچ کرتی ہے ۔ایسی صورتحال میں وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر کو چاہیے کہ وہ بہترین پلاننگ کرتے ہوئے ٹیکنیکل تعلیم کے ذریعے ریاست کے نوجوانوں کو روز گار کے موقاع فراہم کریں۔


Next News Previous News
By
09/01/2017 121 views

Leave A Comment