Jaag Kashmir online news from Dadyal, Dudyal, Mirpur and Azad Kashmir
Jaag Kashmir online news from Dadyal, Dudyal, Mirpur and Azad Kashmir Mon, 16 Jan 2017

فون پر صرف uc browser میں کھولیں

Use UC Browser to open on mobile.

News from Dadyal, Mirpur and all Azad Kashmirعوام اور حکمران !!آرٹیکل

وقاص چوہدری نے یہ خبر 2016-11-20 کو pm07:53 پرcol کی کیٹیگری میں پوسٹ کی اور ابھی تک اس کو 66 قارئین نے پڑھا ہے۔
 

Jaagkashmir.com urdu news dadyal mirpur azad kashmir

تحریر وقار احمد چودھری (جاگ کشمیر نیوز )

        عوام اور حکمران    

کافی دنوں سے ایک موضوع ذہن میں تھا کہ اس پرکچھ لکھا جائے موضوع تھا عوام اور حکمران !کرپٹ ٹولہ،لینڈ مافیہ،نوسرباز اور ریاستی ٹھیکیدار جو لوٹ کھسوٹ اتنے ماہرانہ انداز میں کرتے ہیںکہ سارے داغ حکومت کے دامن پر لگتے ہیںاور بھولی بھالی عوام حکمرانوں کو ذمہ دار قرار دے دیتی ہے اور پھر حکمران بھی تو ہم میں سے ہی ہوتے ہیں وہ عوام پر غصہ اُن تمام ریاست دشمنوں کی پشت پناہی کر کے نکالتے ہیں اور ان تمام برائیو ں میں برابر کے شریک ہو جاتے ہیں۔حکمرانوں اور ریاستی ٹھیکیداروں کواکیلے بیٹھ کر طعنے دینے والی عوام بھی اپنے حصے کی کرپشن کر لیتی ہے اور کہتی ہے ہمارے بدلنے سے کیا ہو گا یہ سسٹم تو جاگیرداروں ،ڈیروں اور حکومت کے ٹھیک ہونے سے ہی درست ہو گا۔ایسا بلکل نہیں ہے ہر شحص کو اپنے حصے کا دیا جلانا ہو گا تب ہی یہ سسٹم ٹھیک ہو سکتا ہے پنجابی کی ایک کہاوت ہے ''کھادا اُس نی جس کی لبا نی''اگر کوئی شحص مزدورہے تو وہ اپنے فرض کو ٹھیک طرح سے نہیں نبھائے گا تو مالک سے بے ایمانی کی صورت میں کرپشن کرے گا اگر کوئی استاد ہے تو وہ طلباء و طالبات کومقررہ وقت سے کم پڑھا ئے گا تو کرپشن کوئی دوکاندار ہے تو وہ اشیاء کی قیمتوں کو اوپر نیچے کر کے کرپشن کرتا ہے ۔ہم جس معاشرے کا حصہ ہیں اس معاشرے کا ہر طبقہ غیر ذمہ دار ہے ہر مسلہ کو حکمرانوں کے کھاتے میں ڈال کر ہر شخص بر ی الزمہ ہو جاتا ہے ۔کو ئی بھی کسی مسئلہ پر خود کو ذمہ دارتسلیم نہیں کرتا حکمرانوں کو کرپشن کا طعنہ دینے والی عوام خود اس کرپشن کی ذمہ دار ہے ۔جس کا جہا ںبس چلتا ہے وہ وہاں ملک کو نقصان پہنچاتا ہے اور مادر شیر کی طرح کھا رہا ہے اور ملک کی تباہی کا ذمہ دار حکمران کو ٹھہراتا ہے۔حکمران اس ملک کی تباہی کے ذمہ دار ضرور ہیں لیکن قوم کا ہر طبقہ اس میں برابرکا شریک ہے۔ہم ایک ایسی قوم ہیں جس قوم میں فٹ پاتھ پر سانڈے کا تیل نکالنے والے اور کیکر کی گوند کو سلاجیت بنا کر بیچنے والے کو ڈاکٹر اور حکیم کہا جا تا ہواور ہاتھ دیکھنے والا اور سڑک پر طوطے سے فال نکالنے والا پروفیسر اور عامل کا بورڈ لگائے بیٹھا ہوااور پانی کے ٹیکے لگانے والا اپنی کلینک کے ماتھے پر اسپیشلسٹ کا اشتہاری بورڈ لگائے ہوئے اور جاہل اسمبلیوں میں پہنچا دئیے جاتے ہیں اور قاتل و مجرم قانون سازی کرتے ہوں وزیر جعلی ڈگریاں لے کر اسمبلیوں میں وزیر تعلیم بن جاتے ہوںاور ڈاکٹریٹ کی ڈگری قابلیت کے بجائے سفارش اور رشوت کی بنیاد پر دینے کا رواج ہے۔ہماری قوم کے فراڈیے ،بہروپئے عالم دین کا ٹائٹل سجائے ہوئے ہوتے ہیںاور ہماری قوم کے مُلا ں عید ،شب رات کے چاند پر ایک دوسرے کی لتریشن کرتے ہوئے دیکھائی دیتے ہیں ہماری قوم میں جوان بیٹیوں والے غریب کے گھر کی دیوار کے ساتھ کروڑوں کی مساجد بنائی جاتی ہے مگر ان بیٹیوں اور انکے والدین کا احساس نہیںکیا جاتا اور نام نہاد عالم آن لائن لوگوں کے ایمان کا پوسٹ مارٹم کرتے ہیں ۔تو اس قوم کے بادشاہ کیا کریں ۔ جس قوم کے دہشت گرد خود کو مجاہد قرار دیتے ہوں اوراس قوم کے منصف انصاف کے ترازو میں دولت کے وزن کے مطابق انصاف کرتے ہوں اور چوکیدار چوروں سے زیادہ لوٹتے ہوں اور جس قوم کے تاجر سو فیصد حرام کی کمائی سے حج عمرے کرتے ہوںاو ر  قوم کے حکمران پیسہ لگا کر اقتدار خریدتے ہوںاور قوم میں بھوک اور افلاس ناچتی ہو اور حکمران تماشہ دیکھتے ہوں تو پھر یاد کر لیجئے ایسی قوم کو رونے دھونے اور شکوے شکایتیں کرنے کے بجائے اپنے اعمال پر نظر ثانی کرنی چاہیے کیونکہ جب ہر کوئی کشتی میں اپنے حصے کا سوراخ کر رہا ہو تو پھر یہ نہیں کہنا چاہیے کہ فلاں کا سوراخ میرے سے بڑا تھا اس لیئے کشتی ڈوب گئی سبھی قصور وار ہیں۔ یہ وطن اللہ پاک کے فضل وکرم کی وجہ سے ہی چل رہا ہے ورنہ ہم نے تو اس وطن کو ڈبونے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ۔ہماری قوم حکمرانوں سے زیادہ بگڑی ہو ئی ہے اور حکمران بھی تو اسی قوم میں سے ہی ہوتے ہیں تو وہ کیسے سیدھے ہو سکتے ہیں ۔

وقار احمد چودھری اسلام گڑھ میرپور آزادکشمیر 

 

اگلی خبر پڑہیں پچھلی خبر پڑہیں
Click on image to Enlarge
Jaag Kashmir urdu news mirpur azad kashmir

ایک ماہ کی مقبول ترین