Jaag Kashmir News


Jaagkashmir.com urdu news dadyal mirpur azad kashmir

ہٹیاں بالا۔چناری ۔چکسواری (نمائندگان جاگ کشمیر نیوز)

زلزلہ2005کو گیارہ سال بیت گئے لوگ اپنے پیاروں کو نہ بھول سکے ہرآنکھ نم،قبرستانوں میں عزیزواقرب کا رش لگ گیا لوگ پیاروں کی یاد میں زاروقطار روتے رہے ضلع ہیڈکواٹرہٹیاں بالا میں سب سے بڑی مرکزی تقریب ہٹیاں بالا میں ہوئی جس کے مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر ضلع ہٹیاں بالا عبدالحمیدکیانی تھے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر ضلع ہٹیاں بالا عبدالحمیدکیانی ،صدرمسلم لیگ(ن)ضلع ہٹیاں بالا محمدفریدخان،بانی صدر این جی اوزفورم آزادکشمیرسیداحسان الحسن گیلانی،ڈی ایس پی سلیم درانی،معروف عالم دین اسحاق نقوی،صدر جہلم ویلی بار آفتاب طارق میرایڈووکیٹ،نائب تحصیل دارقمرعزیزچوہدری،سابق امیدواراسمبلی اسرارہمدانی،لیگی راہنماء راجہ رشیدخان،قاضی فہدایڈووکیٹ،عدنان فاطمی،صاحبزادہ عمران پذیر،ظہوربخاری ،راجہ اعجاز،صابراعوان ودیگر نے کہا کہ آٹھ اکتوبر کا سانحہ اللہ تعالی کی طرف سے آزمائش تھی جس میں آزادکشمیر کے72ہزارافرادشہیدہوئے یہ سانحہ جہاں بہت سے دکھ دے گیا وہاں ہمیں بڑسبق بھی سکھا گیا مقررین نے عالمی برادری،مسلح افواج پاکستان،جملہ این جی اوز،پاکستان کی عوام کا تہہ دل سے ایک بار پھر شکریہ ادا کیا کہ جنہوں نے انہیں دوبارہ اپنے پائوں پر کھڑا ہونے کے لیئے کرداراداکیا جبکہ سٹی سمارٹ سکول بھی ایم ڈی ڈاکٹرذوالفقار،پرنسپل نورمحمدشاہ کی جان سے دعائیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا دریں اثناء انجمن تاجران چناری کی جانب سے دعائیہ تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں انجمن تاجران وکلاء سول سوسائٹی طلباء نے بھرپور شرکت کی اورپیاروں کی یاد میں شمعیںبھی روشن کی گئی ہیں ۔

 زلزلہ8 اکتوبر کی یاد میں پورے آزاد کشمیر سمیت ضلع ہٹیاں بالا، چناری، چکوٹھی اور مضافات میں دعائیہ تقریبات منعقد کی گئیںہر آنکھ آشکبار دکھائی دی اپنے پیاروں کی قبروں پر حاضری اور پھول چڑھائے گئے قیامت خیز زلزلہ کو گذرے 11 سال ہو گئے متاثرین زلزلہ کی آبادکاری مکمل نہ ہو سکی حکمرانوں نے وعدے اور اعلانات کرنا مشغلہ بنا لیا عملی کاموں کی جانب توجہ نہیں دی گئی متاثرین زلزلہ کی امدادی رقم کو عیاشیوں اور سیر سپاٹوں میں اڑا دیا گیا آج تجدید عہد کا دن موجودہ حکومت متاثرین زلزلہ کے مسائل کو حل کرے اور متاثرین جن کے مکانات کے معاوضہ جات رہتے ہیں کو ترجیع بنیادوں پر اداء کرے اور ڈیتھ کلیم کی رقم بھی فوری فراہم کی جائے از سر نو سروے میں حتمی فہرست جو ڈپٹی کمشنر ہٹیاں بالا نے ایرا وسیرا کو فراہم کی کے مطابق فوری طور پر عملدرآمد کرواتے ہوئے اسی ماہ میں متاثرین کے مسائل حل کیئے جائیں راجہ محمد فرید اختر، حاجی منظور احمد، محمد اقبال ، راجہ سعید خان ، الطاف حسین و دیگر کا دعائیہ تقریبات کے موقع پر خطاب انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر قدرتی وسائل سے مالا مال خطہ ہے اور اس چھوٹے سے خطہ کے عوام گذشتہ ایک عرصہ سے اپنے مسائل کا رونا رو رہے ہیں مگر نہ تو وفاق کی جانب سے کوئی ٹھوس حل نکالا گیا اور نہ ہی اس خطہ کے اندر مختلف ادوار میں قائم ہونے والی حکومتوں نے سنجیدگی کا مظاہرہ کیا جو انتہائی افسوس ناک بات ہے انہوں نے کہاکہ متاثرین زلزلہ کی آباد کاری کے لیئے اربوں ڈالر امداد آئی مگر وہ بے حس حکمرانوں نے اپنی عیاشیوں اور جیالا نوازی کی نظر کر دی بیرونی امداد کا انتہائی غلط استعمال کیا گیا اور امدادی رقم بجائے متاثرین کو دینے کے ایرا وسیرا جیسے محکمے بنا کر ماہانہ لاکھوں روپے تنخواہوں میں اڑا دیئے یہ امداد ی رقم بھاری تنخوائیں دینے کے لیئے نہیں بلکہ آبادکاری کے لیئے آئی تھی انہوں نے کہا کہ ضلع ہٹیاں بالا میں متعدد سکولوں کی عمارتیں آج تک نہ بن سکیں کئی لوگوں کو مکانوں کو دوسری اور تیسری قسط نہ دی گئی اور پیسہ غیر ضروری کاموں پر اڑا دیا گیا آج اس دن کے موقع پر ہم حکومت آزاد کشمیر اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اسی ماہ میں جملہ متاثرین زلزلہ جن کے مکانات کی اقساط روکی گئیں وہ اداء کی جائیں اور ڈیتھ کلیم جو باقی ہیں وہ دیئے جائیں اور جملہ سکولوں کی عمارتوں پر کام کا آغاز کیا جائے اور دسمبر سے قبل تعمیر مکمل کر کے بچوں کو محفوظ بنانے کے اقدامات اٹھائے جائیں اور ایرا و سیرا کا محکمہ فوری ختم کرتے ہوئے امدادی رقم ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کے زریعے متاثرین کو منتقل کی جائے اور تعمیراتی کاموں کی نگرانی کا کام بھی ضلعی انتظامیہ کو سونپا جائے تاکہ فضول اخراجات اور تنخواہوں کی مد میں خرچ ہونے والی رقم اصل جگہ پر خرچ ہو اور عوام کے مسائل میں بھی کمی آ سکے.

آٹھ اکتوبرکے حوالے سے گورنمنٹ بوائزڈگری کالج چکسواری میں یومِ استغفارکے نام سے ایک تقریب کاانعقادکیاگیا جس میں کالج کے پروفیسرصاحبان اورطلباء نے شرکت کی۔ادارے کے پرنسپل پروفیسرمحمداسلم راہی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ زمینی وآسمانی آفات ہمارے لیے باعث عبرت ہوتی ہیں اورایسے موقعوں پرکثرت سے توبہ استغفارکرنی چاہیے۔انہوں نے آزادکشمیر وپاکستان کی تاریخ کے ہولناک زلزلے جوآٹھ اکتوبر2005ء کوآیاتھاکے نتیجے میں طلباء کوایک دلخراش اورسبق آموزواقع بھی سنایا۔انہوںنے کہاکہ اسلام ایثاروقربانی کے جذبے کوبہت اہمیت دیتاہے اورایسی موقعوں پربالخصوص ایثاروقربانی کامظاہرہ کرتے ہوئے ایک دوسرے کی بے لوث مددکرنی چاہیے۔اس سے پہلے تقریب کاباقاعدہ آغازتلاوت کلامِ پاک سے کیاگیا جس کی سعادت جماعت ایف۔اے سال اول کے طالب علم محمدواصف بسمل نے حاصل کی جبکہ نعت رسول مقبولۖ جماعت ایف۔اے سال اول کے طالب علم فہدادریس نے پیش کی۔تقریب میں پاکستان وآزادکشمیرکاترانہ فہدادریس اورمحمدضیاء نے پڑھا اوردعااقبال پڑھنے کی سعادت اسدعلی اورریاست حسین نے حاصل کی جبکہ نظامت کے فرائض ایف۔اے سال اول کے طالب علم ثاقب نوازنے بخوبی انجام دیے۔تقریب کے آخرمیں ادارے کے پروفیسرتنویراحمدنے شہدائے زلزلہ کے درجات کی بلندی،لواحقین کے لیے صبرجمیل،کشمیر کی آزادی اورپاکستان کے استحکام کے لیے خصوصی دعاکی۔

چکسواری(عابد حسین چودھری)راجہ راشدمحمودتراب ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ایلیمنٹڑی اینڈسیکنڈر ی سکولز مردانہ ضلع میرپور کی ہدایت پرشہدائے زلزلہ کی گیارہویں برسی کے موقع پرصوفی محمدیعقوب شہیدگورنمنٹ ہائی سکول ڈھانگری بالامیں دعائیہ تقریب منعقدکی گئی ۔8:52منٹ پرایک منٹ کی خاموشی اختیارکی گئی ۔ شہدائے زلزلہ کے درجات کی بلندی کے لیے دعاکی گئی ۔ دعائیہ تقریب سے ادارہ کے صدرمعلم چودھری محمدبشیرپرواز،خورشیداحمد، محمدیاسین اوردیگرمعلمین نے خطاب کیا۔ صدرمعلم چودھری محمدبشیرپروازنے کہاکہ8اکتوبر2005ء کازلزلہ قیامت صغری سے کم نہیں تھا۔شہدائے زلزلہ کوکبھی بھول نہیں سکتے ۔زلزلہ میں ہونے والے جانی ومالی نقصانات کاازالہ ممکن نہیں مگرزلزلہ نے پوری قوم کومتحدکردیاتھامتاثرہ علاقوں میں قوم نے بھائی چارہ ،ایثاراوریکجہتی کابے مثال مظاہرہ کیا۔متاثرین زلزلہ کی بھرپورامدادکی گئی ۔ انھو ں نے کہاکہ قدرتی آفات سے نبردآزماہونے کی تیاری ضروری ہے ۔محفوظ مستقبل کے لیے قدرتی آفات سے نمٹنے کے انتظامات کیے جائیں ۔عوام میںشعوربیدارکیاجائے۔

 

 

 

 


Next News Previous News
By Waqas Ch
08/10/2016 134 views

Leave A Comment